Post Tagged with: "Lenin"

کتاب: ’’کشمیر کی آزادی۔۔۔ایک سوشلسٹ حل‘‘کا پیش لفظ

کتاب: ’’کشمیر کی آزادی۔۔۔ایک سوشلسٹ حل‘‘کا پیش لفظ

|تحریر: یاسر ارشاد| محکوم اقوام کے حالاتِ زندگی عمومی طور پر اس قدر بھیانک ہوتے ہیں کہ ان کے خطوں میں بسنے والے عوام اور نوجوانوں کے لیے آزادی کا سوال انتہائی فوری اور عملی نوعیت کا ہوتا ہے۔ ایک غاصبانہ جبر تلے ان خطوں کے وسائل کی لوٹ مار، […]

November 14, 2019 ×
انقلابِ روس کی حاصلات

انقلابِ روس کی حاصلات

|تحریر: ولید خان| کسی بھی عہد میں حکمران طبقہ نہ صرف وسائل اور ریاست پر قابض ہوتا ہے بلکہ اپنی مرضی اور ضرورت کے مطابق تاریخ کو بھی مستقل مسخ کرتا رہتا ہے تاکہ ظلم و جبر اور استحصال کے شکار عوام کے ذہن سے ان کی اصل تاریخ ختم […]

November 8, 2019 ×
انقلابِ روس اور آج کی دنیا

انقلابِ روس اور آج کی دنیا

|تحریر: زین العابدین| سرمایہ داری کی تاریخ میں جس ایک واقعے کے خلاف سب سے زیادہ پروپیگنڈا کیا گیا اور اس کی یاد تک کو محنت کش عوام کے ذہنوں سے کھرچنے کی کوشش کی گئی وہ 1917ء میں برپا ہونے والا عظیم انقلابِ روس ہے جس نے تاریخ کا […]

November 7, 2019 ×
لینن ازم کیا ہے؟ 

لینن ازم کیا ہے؟ 

|تحریر: آفتاب اشرف| 1917ء میں برپا ہونے والا انقلاب روس بلاشبہ انسانی تاریخ کا عظیم ترین واقعہ تھا۔ 1871ء میں صرف دو ماہ کیلئے قائم رہنے والے پیرس کمیون کو چھوڑ کر انقلاب روس تاریخ کا وہ پہلا واقعہ تھا جس میں کروڑوں محنت کشوں نے نوجوانوں اور چھوٹے کسانوں […]

December 7, 2017 ×
فیصلہ کن موڑ

فیصلہ کن موڑ

تحریر: وی آئی لینن (یہ مضمون لینن نے 26جون 1917ء کو لکھا جب ردانقلابی عبوری حکومت بالشویک پارٹی کے خلاف کاروائیاں کرنے کی حکمت عملی ترتیب دے رہی تھی جس کی وجہ بالشویک پارٹی کی جنگ جاری رکھنے کی حکومتی پالیسی کی مخالفت اور عبوری حکومت کی عوامی مسائل کو […]

July 22, 2017 ×
فروری انقلاب کے دوران پوٹیلوف کے محنت کش سڑکوں پر۔ بایاں بینر: ’’محافظوں(فوجیوں) کے بچوں کو کھانا دو‘‘ دایاں بینر: ’’فوجیوں کے خاندانوں کو معاوضوں کی ادائیگی بڑھائی جائے-آزادی اور امنِ عالم کے محافظ‘‘

1917ء کا فروری انقلاب۔۔۔ جب تخت گرائے گئے!

فیکٹریوں میں دیو ہیکل اکٹھ اور مظاہرین کا بے پناہ ہجوم سڑکوں پر تھا۔ عوام کے ہجوم پولیس اور فوج کو پرے دھکیلتے ہوئے ’’روٹی‘‘، ’’امن‘‘ اور ’’ آمریت مردہ باد!‘‘ کے نعرے لگاتے ہوئے شہر کے وسط میں پہنچ گئے۔ انقلاب شروع ہو چکا تھا

March 13, 2017 ×
لیوٹالسٹائی، روسی انقلاب کا آئینہ

لیوٹالسٹائی، روسی انقلاب کا آئینہ

ٹالسٹائی کی تصانیف، خیالات، اصولوں میں اور ان کے مکتبۂ خیال میں تضاد واقعی بہت نمایاں ہیں۔ ایک طرف ہمارے سامنے ایک ایسا عظیم فنکار ہے جس نے نہ صرف روسی زندگی کی بے نظیرتصویر کشی کی ہے بلکہ عالمی ادب کے خزانے میں بیش بہا اضا فہ بھی کیا ہے۔ دوسری طرف ہمارے سامنے ایک ایسا زمیندار ہے جس پر حضرت عیسیٰ کا وہم مسلط ہے

January 5, 2017 ×
کمیو نزم میں ’’بائیں بازو‘‘ کی طفلانہ بیماری

کمیو نزم میں ’’بائیں بازو‘‘ کی طفلانہ بیماری

ولادیمیر لینن نے یہ کتاب 1920ء میں تحریر کی اور اسی سال شائع ہوئی۔1920ء میں ہی ہونے والی کامینٹرن کی دوسری عالمی کانگریس میں موجود ہر ڈیلیگیٹ کو اس کتاب کا ایک نسخہ پیش کیا گیا۔

April 6, 2016 ×
مارکس ازم کے تین سرچشمے اورتین اجزاے ترکیبی

مارکس ازم کے تین سرچشمے اورتین اجزاے ترکیبی

تحریر: ولادیمیر لینن(1913ء) تمام متمدن دنیا میں مارکس کی تعلیمات سے بورژوا علم (سرکاری بھی اور اعتدال پسند بھی) بھڑکتا ہے اور سخت عداوت رکھتا ہے۔ اس کی نظر میں مارکس ازم کیا ہے، ایک ’’مہلک فرقہ‘‘۔

April 6, 2016 ×
فریڈرک اینگلز کی وفات پرلینن کی تحریر

فریڈرک اینگلز کی وفات پرلینن کی تحریر

کیا عقل کا چراغ تھا خاموش ہو گیا۔ ۔ ۔ کیا دل تھا، دھڑکنوں کے تلاطم میں سو گیا

September 30, 2013 ×
نومبر 1917: انقلاب کی فیصلہ کن رات

نومبر 1917: انقلاب کی فیصلہ کن رات

تحریر: لیون ٹراٹسکی:- انقلاب کا قطعی وقت آپہنچا تھا۔سمولنی (مجلس عاملہ کا دفتر) کو ایک قلعے میں تبدیل کیا جارہا تھا۔ اس کی چھتوں پر دو درجن مشین گن نصب کر دی گئی تھیں۔

April 21, 2012 ×
ریاست اور انقلاب

ریاست اور انقلاب

’’ریاست اور انقلاب‘‘ بالشویک انقلاب کے قائد ولادیمیر لینن کی شہرہ آفاق کتاب ہے۔ یہ کتاب لینن نے جولائی 1917ء میں اس وقت لکھی جب وہ زیرِ زمین پارٹی کی قیادت کر رہے تھے۔

April 14, 2012 ×